Elizabeth Bathory

تاریخ کی خطرناک ترین عورت.

ہمارا ایمان ہے کہ آج نہیں تو کل ہم سب کو ایک دن اس دنیا سے چلے جانا ہے. موت برحق ہے.
جو ہمیں ایک دن آنی ہی ہے۔
آپ جانتے ہیں کہ تاریخ میں کچھ ایسے بھی لوگ گزرے ہیں۔ جن کو لگتا تھا کہ وہ ہمیشہ کے لئے زندہ رہ سکتے ہیں ۔
اسی کوشش میں یہ لوگ تقریبا پاگل ہوگئے تھے لیکن ایسے لوگوں کے ساتھ کیا ہوا ایسے ہی عجیب و غریب لوگوں میں سے ایک عوت کے بارے میں “میں آپ کو بتاؤں گا۔ تاریخ کی خطرناک ترین عورت کا ذکر کیا جائے گا۔ یہ عورت اس سلسلے میں بہت اہم ہوگی۔
Elizabeth Bathory نامی عورت 7 اگست 1560 کو ہنگری میں پیدا ہوئی تھی۔
یہ بہت امیر عورت تھی ۔ ہنگری کے بہت بڑے خاندان سے تھی۔ اس کا شوہر فوج کا سربراہ تھا۔
اس کی عادتیں بچپن سے ہی عجیب و غریب تھیں۔
لیکن اصل مسئلہ پیدا ہوا جب یہ عورت بوڑھی ہونا شروع ہوئی ۔
بچپن” جوانی” اور بڑھاپا “زندگی کا حصہ ہے۔
لیکن یہ عورت بوڑھا ہونا اور کبھی بھی مرنا نہیں چاہتی تھی۔
ہمیشہ جوان رہنے کے لیے ہمیشہ زندہ رہنے کی خواہش میں یہ عورت پاگل ہونا شروع ہوگئی۔ اس کو لگتا تھا کہ اگر یہ جوان لڑکیوں کے خون میں نہائے گی۔ تو یہ کبھی بھی بوڑھی نہیں ہوگی۔ اور ہمیشہ زندہ رہے گی۔ اس پاگل پن میں عورت نے ساڑھے6 سو لڑکیوں کو اذیت دے کر قتل کر دیا ۔
اس کو تاریخ کی سب سے خطرناک سیریل کیلر
بھی کہا جاتا ہے۔ آہستہ آہستہ اس کے جرم کے قصے مشہور ہوتے گئے ۔
آخر کار ہینگری کے بادشاہ نے اس عورت کے محل میں اپنی فوج بھجوا کر اس کو گرفتار کرلیا ۔
اس عورت کو ایک چھوٹی سی کوٹھڑی میں قید کردیا گیا ۔
چار سال تک ایک کوٹھڑی میں قید رہنے کے بعد 21 اگست 1614کو اسی کوٹھڑی میں موت ہو گئی تھی.

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں