locust attack, ٹڈی دل

ٹڈی دل کے خاتمے کیلئے 100سے زائد آپریشن.

راجن پور میں ٹڈی دل کے خاتمے کے لیے ضلع بھر میں 100 سے زائد آپریشن کیے گئے اور 66 ہزار ایکڑ سے زائد رقبے پر ٹڈی دل کے خاتمے کے لیے اسپرے کیا گیا۔

کسانوں کی فصلات کو نقصان سے بچانے کے لیے وفاقی و صوبائی محکموں کے تمام دستیاب وسائل استعمال میں لائے گئے۔

ڈپٹی کمشنر راجن پور والفقار علی کھرل نے بتایا کہ ہیلی کاپٹر، فوکر تیارے اور مشینری کو انسداد ٹڈی دل آپریشن میں استعمال میں لایا گیا۔ آگاہی مہم کے ذریعے کسانوں کو ٹڈی دل سے بچاو کے لیے حفاظتی اقدامات اختیار کرنے بارے متعدد سیمینارز بھی کرائے گئے۔

انڈے سے لیکر مکمل بالغ ٹڈی دل کی پہچان کرنے کے لیے کسانوں کو آگاہی فراہم کی گئی اور محکمہ زراعت کی جانب سے معلوماتی مواد کسانوں میں تقسیم کیا گیا۔ بالغ ٹڈی دل پیلے رنگ گا اور نابالغ ہلکے گلابی کا رنگ کا ہوتا ہے۔

مادہ ٹڈی دل زمین کے چار فٹ نیچے 90 کے قریب انڈے دیتا ہے جو گچھے کی صورت میں ہوتے ہیں۔ کسانوں کو چاہیے کہ وہ ٹڈی دل کے انڈے دیکھتے ہی تلف کر دیں یا ان بارے اطلاع ضلعی انتظامیہ کو دیں۔

ٹڈی دل کے خاتمے کے لیے حکومت پنجاب رات دن کوشاں تو ضرور ہے لیکن بلوچستان کے راستے نئے آنے والے ٹڈی دل کے غول سے کسانوں کو نقصانات سے بچانے کے لیے بروقت اقدامات ضروری ہیں۔

سورس : سمائ نیوز

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں